گیت بنے ہتھیار

اے وطن میرے وطن پیارے وطن (عہدِ اہلِ وطن ) شاعر قتیل شفائی

اے وطن میرے وطن پیارے وطن
کس قدر شاداب ہیں تیرے چمن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن
تیرا ہر موسِم خوشی کا رازداں
تیرے جھونکوں میں حیاتِ جاوداں
تجھ کو حاصل ہے بہارِ بے خزاں
تا ابد مہکیں ترے سرو سمن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن
کس قدر شاداب ہیں تیرے چمن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن
لوگ جتنے بھی یہاں آباد ہیں
تیری خوشحالی سے وہ دلشاد ہیں
ان کے دل ہر خوف سے آزاد ہیں
تو کہے تو ابندھ لیں سر سے کفن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن
کس قدر شاداب ہیں تیرے چمن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن
تیری عزت کے لیے کٹ جائیں
تیرا پرچم ہر کہیں لہرائیں گے
تیری عظمت کے ترانے گائیں گے
دل سے جائے گی نہ اب تیری لگن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن
کس قدر شاداب ہیں تیرے چمن
اے وطن میرے وطن پیارے وطن

شاعر : قتیل شفائی
گلوکار : سلیم رضا ، کورس
موسیقی : میاں شہر یار
ریڈیو پاکستان لاہور

  • Print