گیت بنے ہتھیار

خطّۂ لاہور تیرے جانثاروں کو سلام شاعر رئیس امروہوی

  • خطّۂ لاہور تیرے جانثاروں کو سلام شہریوں کو غازیوں کو شہسواروں کو سلام خطۂ لاہور کیا رتبہ ہے تیری خاک کا تو ہے اسٹالن گراڈ اس سرزمینِ پاک کا ارضِ شالامار راوی کے کناروں کو سلام خطّۂ لاہور تیرے جانثاروں کو سلام ایک ہی جھٹکے میں دشمن کی کلائی موڑ دی تو نے دشمن کی […]

  • رنگ لائے گا شہیدوں کا لہو .. شاعر تنویر نقوی

    رنگ لائے گا شہیدوں کا لہو یہ لہو سرخی ہے آزادی کے افسانے کی یہ شفق رنگ لہو رنگ لائے گا شہیدوں کا لہو جس کے ہر قطرے میں خورشید کئی جس کی ہر بوند میں اک صبح نئی دور جس صبحِ درخشاں سے اندھیرا ہوگا رات کٹ جائے گی گل رنگ سویرا ہوگا رنگ […]

  • اے وطن میرے وطن پیارے وطن (عہدِ اہلِ وطن ) شاعر قتیل شفائی

    اے وطن میرے وطن پیارے وطن کس قدر شاداب ہیں تیرے چمن اے وطن میرے وطن پیارے وطن تیرا ہر موسِم خوشی کا رازداں تیرے جھونکوں میں حیاتِ جاوداں تجھ کو حاصل ہے بہارِ بے خزاں تا ابد مہکیں ترے سرو سمن اے وطن میرے وطن پیارے وطن کس قدر شاداب ہیں تیرے چمن اے […]

  • کرنیل نی جرنیل نی …شاعر صوفی غلام مصطفی تبسم

    او ماہی چھیل چھبیلا ہائے نی کرنیل نی جرنیل نی میرا ماہی چھیل چھبیلا کرنیل نی جرنیل سارے جگ کولوں نیارا سانوں جن کو نوں پیارا او ماہی رنگ رنگیلا ہائے نی کرنیل نی جرنیل نی اپنی جان دکھا وچ پاکے دیس دی عزت آن بچاوے لوکی دین دعائیں ۔۔۔شالا کفر بلائیں میرا جیوے ڈھول […]

  • اے مردِ مجاہد جاگ ذرا ..شاعر طفیل ہوشیار پوری

    اللہ اکبر۔۔۔۔۔۔اللہ اکبر اللہ کی رحمت کا سایہ توحید کا پرچم لہرایا اے مردِ مجاہد جاگ ذرا اب وقتِ شہادت ہے آیا اللہ اکبر۔۔۔۔۔۔اللہ اکبر سر رکھ کے ہتھیلی پر جانا ہے ظلم سے تجھ کو ٹکرانا ایمان ہے متوالا تو اسلام کا ہے رکھوالا تو ایمان ہے تیرا سرمایہ اے مردِ مجاہد جاگ ذرا […]

  • جنگ کھیڈ نئیں ہوندی زنانیاں دی .. شاعر ڈاکٹر رشید انور

    اج ہندیاں جنگ دی گل چھیڑیں اکھ ہوئی حیران حیرانیاں دی مہاراج اے کھیڈ تلوار دی اے جنگ کھیڈ نئیں ہوندی زنانیاں دی جنگ کھیڈ نئیں ہوندی زنانیاں دی اسیں سندھی بنگالی بلوچ پٹھے اسیں پت پنجاب دے پانیاں دے اسین نسل محمودؒ دے غازیاں دے دودھ پیتے نیں ماواں پٹھانیاں دے سانوں چھیڑ کے […]

  • میرا سوہنا شہر قصور نی ..شاعر صوفی غلام مصطفی تبسم

    میرا سوہنا شہر قصور نی ہویا دنیا وچ مشہور نی میرا سوہنا شہر قصور نی یہ شہر ترکاں تازیاں دا ایہہ بستی مرد دلیراں دی یہ شہر سپاہیاں غازیاں دا ایہہ نگری رب دیاں شیراں نیں ایہہ دیاں دھماں دور دور نی میرا سوہنا شہر قصور نی میرا سوہنا شہر قصور نی ایہہ شہر شاہ […]

  • اس قوم کو للکارا ہے !! شاعر فیاض ہاشمی

    دشمنو ! تم اس قوم کو للکارا ہے کعبہ ہے جن کی جبینوں میں قرآن ہے روشن سینوں میں اللہ کا جن کو سہارا ہے دشمنو ! تم نے اس قوم کو للکارا ہے ہم جب ہلالی پرچم ک لہراکے قدم بڑھاتے ہیں جھکتا ہے فلک ہلتی ہے زمیں بت خانوں کے بت گرجاتے ہیں […]